Action
Farhana Sadiq
Farhana Sadiq کومنٹس

بشکریہ عبدو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
قاری حنیف ڈار کہتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔
بعض حضرات کے اپنے معاملات، کچھ درست نہیں ھوتے مگر وہ بیوی کو صحابیہؓ بنانے کی کوشش کرتے ھیں،، نتیجہ کھڑاک کی صورت میں نکلتا ھے،، خاتون نے پردہ کرنا شروع کر دیا،، بازار نہیں جاتی،، جو چیز چاھئے حضرت گھر ھی لۓ آ کر پسند کروا لیتے ھیں،،اصرار پر بازار لے جائیں تو گاڑی میں ھی بٹھا کر رکھتے ھیں اور گاڑی میں ھی کپڑا جوتا دکھاتے ھیں،، خاتون بھی کوئی گائے بکریاں چراتی نہیں آئی تھی،، ملٹری اکیڈیمی کی پروفیسر تھی ،،مگر اسلام مین ڈھلتی چلی گئ،،
گھر چھٹی جاتے ھیں تو صاحب کی اپنی کنواری بہن رات بارہ بجے واپس آتی ھے،، ساری بہنیں پردہ نہیں کرتیں، وہ رات کو انہیں سمجھاتی کہ بہن کو سمجھائیں اور اللہ رسولﷺ کا حکم بتائیں کہ پردہ کرے اور وقت پر گھر آیا کرے،، صبح منہ دھونے سے پہلے امی کو جا کر بتاتے ھیں کہ مجھے بہنوں کے بارے میں پٹی پڑھاتی ھے،، ظاھر ھے پھر ساس اور نندوں نے تو اس کو پھینٹی لگانی ھے !
واپس آتے ھیں تو اپنی سیکرٹری سے ھنس ھنس کر گھنٹوں باتیں ھوتی ھیں،،ھاسے بغلوں اور کچھوں سے نکلتے ھیں، کوئی نہیں سوچتا وہ بھی کسی کی بہن ،بیٹی بیوی ھو گی،، اب ردعمل کی باری آتی ھے،، اس عورت نے جمعے والے دن صبح صبح فون کر کے مجھے،جس کا خطبہ اس کا شوھر باقاعدگی سے سنتا ھے،اپنے شوھر کو اور اس منافقانہ اسلام کو اتنی گالیاں دیں،، کہ رھے نام اللہ کا،، اس کے بعد اتنا روئی اتنا روئی کہ مجھے بھی اشکبار کر دیا،،
سارا اسلام بیوی کے لئے نہیں شوھر ، ساس اور نندیں بھی ایک ایک چمچ نہار منہ کھا لیا کریں،، اگر بہنیں نہیں مانتیں تو قطع تعلق کریں تا کہ آپکی بیوی کو آپ کے دینی اخلاص کا یقین ھو،، یہ دین نہیں دین کے نام پر کسی کو تنگ کرنا ھوتا ھے،، حضرت عمرؓ نے بیوی کو ڈانٹا تھا کہ " جواب دیتی ھو ؟ گھر والی نے بیٹی کا طعنہ دیا تھا،،ذرا جا کے نبیﷺ سے پوچھنا تیری بیٹی اللہ کے رسولﷺ کو جواب دیتی ھے،، عمرؓ کی شان کوئی نبیﷺ سے زیادہ نہیں،،،
۔

(Ab Do حضرت عمرؓ سے مروی ھے کہ مکے میں ھم عورتوں کو دبا کر رکھتے تھے،جبکہ مدینے میں عورتیں ذرا کھلی ڈھلی تھیں،، جن سے ھماری عورتوں نے بھی پلٹ کر جواب دینا سیکھ لیا،،ایک دن میری بیوی نے جو جواب پلٹا تو میں نے غصے سے کہا" جواب دیتی ھو" ! میری بیوی نے کہا عمرؓ تیری بیٹی اللہ کے رسولﷺ کو جواب دیتی ھے، اور وہ برداشت کرتے ھیں، اور وہ اللہ کے رسولﷺ سے ناراض بھی ھو جاتی ھے،، یہ سن کر میں حفصہ کے پاس گیا اور اسے یہ یہ سمجھایا،، اس نے کہا کہ ابا جان ساری بیویاں ھی ایسا کرتی ھیں،، اس پہ میں سب ازواج النبی کے پاس گیا اور ان کو سمجھایا،یہانتک کہ ام سلمیؓ نے مجھے ڈانٹ دیا کہ عمرؓ تم اب اللہ کے رسولﷺ کے عائلی اور پرائویٹ امور میں بھی دخل دینے لگے ھو تمہاری یہ جرات؟ ( کیا اللہ کے رسولﷺ ھمیں یہ باتیں کہنے کے لئے کافی نہیں ھیں ) یہ حدیث بخاری اور مسلم میں آئی ھے،ایلاء کے باب میں !
45 minutes ago · Unlike · 5))

بحث میں شامل ہونے کے لیے یہاں کلک کریں۔ کومنٹس پڑھیں پرنٹ کریں

25 کومنٹس

Arshad Mehmood

Hameed Niazi

Farhana Sadiq

Arshad Mehmood

Farhana Sadiq

Arshad Mehmood

Farhana Sadiq

Hameed Niazi

Arshad Mehmood

Farhana Sadiq

Arshad Mehmood

Farhana Sadiq

Arshad Mehmood

Zubyr Qaisar

Arshad Mehmood

Farhana Sadiq

Zubyr Qaisar

Arshad Mehmood

Arshad Mehmood

Hameed Niazi

Akif Mahmood

Akif Mahmood

Abrar Jan

Abrar Jan

Abrar Jan


بحث میں شامل ہونے کے لیے یہاں کلک کریں۔